صفحات

منگل، 11 مارچ، 2014

آگاہی -2

 آگاہی -1
جن دوستوں نے بالا 17 الفاظ  یعنی    أَعُوذُ بِاللّهِ سے   نَسْتَعِينُ تک  اور اُن سے بننے والے   587اللہ کے الفاظ کا  اُمّی  (بنیادی) علم آیا  -اب ہم آگے پڑھیں گے -
 اِن  الفاظ پر کلک کریں ، آپ اِن سے بننے والے الفاظ پر پہنچ جائیں گے ، جو اللہ کی آیات میں  موجود ہیں ۔

الضَّالِّينَ : صِرَ‌اطَ الَّذِينَ أَنْعَمْتَ عَلَيْهِمْ غَيْرِ‌ الْمَغْضُوبِ عَلَيْهِمْ وَلَا الضَّالِّينَ












ایک چھوٹی سے توجہ :
" ض ل ل "  مادے سے، بننے والے 46 الفاظ الکتاب میں آئے ہیں جن کا بنیادی مفہوم یہی ہے کہ ، کسی  پر :
کذب ( صوتی یا بصری ) طریقوں سے "سبیل الناس" کو الحق بناتے ہوئے ،اُس کے ذہن پر ( سمع یا بصری illusion ) اثر انداز ہونا اور اُس کے خیال میں ، "سبیل اللہ" کا تصور دھندلانا اور اُسے " صراط المستقیم " سے ہٹانا ۔
اِس عمل میں کامیابی حاصل کرنے کے لئے محکمات میں متشھابھات ، کو اِس طرح  ملانا کہ متشھابھات ،  محکمات کا روپ دھار لیں ۔
اِس کی سادہ مثال ۔ کچے آڑووں (
محکمات) پر ، ایسا رنگ (متشھابھات) کرنا کہ وہ پکّے آڑو نظر آئیں ۔ اور خریدار " ض ل ل " ہو کر اُنہیں خرید لے ۔ لیکن جب اُن کا عملی استعمال کیا جائے ، تو نتیجہ دھوکے کی صورت میں نکلے !



٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭ 

آگاہی -2

٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭






لَا : صِرَ‌اطَ الَّذِينَ أَنْعَمْتَ عَلَيْهِمْ غَيْرِ‌ الْمَغْضُوبِ عَلَيْهِمْ وَلَا الضَّالِّينَ



٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭

اگلا لفظ جو اللہ تعالیٰ نے محمد رسول اللہ کے ذریعے ہمیں عربی میں بتایا ۔ وہ

الضَّالِّينَ   ہے ۔ یعنی 

 صِرَ‌اطَ الَّذِينَ أَنْعَمْتَ عَلَيْهِمْ غَيْرِ‌ الْمَغْضُوبِ عَلَيْهِمْ وَلَا الضَّالِّينَ

٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭

الْمَغْضُوبِ : صِرَ‌اطَ الَّذِينَ أَنْعَمْتَ عَلَيْهِمْ غَيْرِ‌ الْمَغْضُوبِ عَلَيْهِمْ وَلَا الضَّالِّينَ




٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭ 

اگلا لفظ جو اللہ تعالیٰ نے محمد رسول اللہ کے ذریعے ہمیں عربی میں بتایا ۔ وہ

لَا  ہے ۔ یعنی 

صِرَ‌اطَ الَّذِينَ أَنْعَمْتَ عَلَيْهِمْ غَيْرِ‌ الْمَغْضُوبِ عَلَيْهِمْ وَلَا الضَّالِّينَ

٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭

غَيْرِ‌ : صِرَ‌اطَ الَّذِينَ أَنْعَمْتَ عَلَيْهِمْ غَيْرِ‌ الْمَغْضُوبِ عَلَيْهِمْ وَلَا الضَّالِّينَ





٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭
اگلا لفظ جو اللہ تعالیٰ نے محمد رسول اللہ کے ذریعے ہمیں عربی میں بتایا ۔ وہ

الْمَغْضُوبِ  ہے ۔ یعنی

 صِرَ‌اطَ الَّذِينَ أَنْعَمْتَ عَلَيْهِمْ غَيْرِ‌ الْمَغْضُوبِ عَلَيْهِمْ وَلَا الضَّالِّينَ

٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭

عَلَيْهِمْ : صِرَ‌اطَ الَّذِينَ أَنْعَمْتَ عَلَيْهِمْ غَيْرِ‌ الْمَغْضُوبِ عَلَيْهِمْ وَلَا الضَّالِّينَ



٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭
اگلا لفظ جو اللہ تعالیٰ نے محمد رسول اللہ کے ذریعے ہمیں عربی میں بتایا ۔ وہ

غَيْرِ‌  ہے ۔ یعنی

 صِرَ‌اطَ الَّذِينَ أَنْعَمْتَ عَلَيْهِمْ غَيْرِ‌ الْمَغْضُوبِ عَلَيْهِمْ وَلَا الضَّالِّينَ

٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭

أَنْعَمْتَ : صِرَ‌اطَ الَّذِينَ أَنْعَمْتَ عَلَيْهِمْ غَيْرِ‌ الْمَغْضُوبِ عَلَيْهِمْ وَلَا الضَّالِّينَ





٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭
اگلا لفظ جو اللہ تعالیٰ نے محمد رسول اللہ کے ذریعے ہمیں عربی میں بتایا ۔ وہ

عَلَيْهِمْ

 ہے ۔ یعنی

 صِرَ‌اطَ الَّذِينَ أَنْعَمْتَ عَلَيْهِمْ غَيْرِ‌ الْمَغْضُوبِ عَلَيْهِمْ وَلَا الضَّالِّينَ

٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭

الَّذِينَ : صِرَ‌اطَ الَّذِينَ أَنْعَمْتَ عَلَيْهِمْ غَيْرِ‌ الْمَغْضُوبِ عَلَيْهِمْ وَلَا الضَّالِّينَ

 الکتاب  ،  القرآن، الفرقان ،البرھان
   صِرَاطَ الَّذِینَ اَنعَمتَ عَلَیھِم غَیرِ المَغضُوبِ عَلَیھِم وَ لَا الضَّآلِّینَ  (1:7) 
٭۔ الَّذِینَ  ۔خاص وہ/اُن (مذکر)  (1080) .(مادہ۔ذ ا  ) ضمیر   ( Pronoun)
  ٭۔الذی۔(وہ/اُن (مذکر)   ) سے بننے والے دیگر الفاظ۔
 
  الذی۔سے پہلے حروفَ جر بھی لگاتے ہیں۔ 

بِالَّذِی۔کَالَّذِی۔لِلَّذی۔وَاَلَّذِی۔وَاَلَّذَانِ۔وَاَلَّذِینَ۔کَالَّذِینَ۔لِلَّذِینَ۔بِالَّذِینَ۔فَالَّذِینَ۔

الذی۔سے پہلے ضمیریں لگاکر اسم معرفہ کی خصوصیت کی وضاحت کی جاتی ہے۔ 
 ھُوَاَلَّذِی۔ھَٰذَا اَلَّذِی- أُولَـٰئِكَ الَّذِينَ -
 ٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭ ٭٭
اگلا لفظ جو اللہ تعالیٰ نے محمد رسول اللہ کے ذریعے ہمیں عربی میں بتایا ۔ وہ

أَنْعَمْتَ ہے ۔ یعنی

  صِرَ‌اطَ الَّذِينَ أَنْعَمْتَ عَلَيْهِمْ غَيْرِ‌ الْمَغْضُوبِ عَلَيْهِمْ وَلَا الضَّالِّينَ

٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭

الْمُسْتَقِيمَ : اهْدِنَا الصِّرَ‌اطَ الْمُسْتَقِيمَ























٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭
اگلا لفظ جو اللہ تعالیٰ نے محمد رسول اللہ کے ذریعے ہمیں عربی میں بتایا ۔ وہ

الَّذِينَ  ہے ۔ یعنی

الَّذِينَ : صِرَ‌اطَ الَّذِينَ أَنْعَمْتَ عَلَيْهِمْ غَيْرِ‌ الْمَغْضُوبِ عَلَيْهِمْ وَلَا الضَّالِّينَ

٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭

ہفتہ، 8 مارچ، 2014

آگاہی -1

  الکتاب  ،  القرآن، الفرقان

معلّم القرآن (الرحمٰن)  نے   رَحْمَةً لِّلْعَالَمِينکو  بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيمِ سے مِنَ الْجِنَّةِ وَ النَّاسِ تک عربی کے الفاظ میں حفظ کرایا  ۔ 

جو الارض کے انسانوں تک ، عربی میں تلاوت کرنا  فرض بنا ۔ نہ تفسیر سکھائی اور نہ ہی لغات  کا گھٹیا کام کیا ۔

 القرآن کی تلاوت سے اپنا فہم بنائیں ۔

القرآن    ایک بنیادی لفظ  سے بننے والے تمام الفاظ کا اردو میں ایک ہی نزدیک ترین  بنیادی   " اُمّی "   یعنی اُن پڑھوں والا  ترجمہ لیا ہے-
  سورۃ الفاتحہ میں استعمال ہونے والے ، اللہ کے     بنیادی  الفاظ ۔

جیسے  ،" شطن " لفظ جس آیت میں بھی  آئے گا  اُس کا فہم    " شطن "ہی رہے گا ۔  کسی اور لفظ کے فہم میں تبدیل نہیں ہو سکے گا ۔ اِسی طرح       " ضلل " کا فہم ، " ضلل "ہی رہے گا
"غضب" میں تبدیل نہیں کیا جاسکتا ۔
 تھوڑی سی محنت کے بعد آپ محسوس کریں گے، کہ آپ القرآن کی تلاوت آسانی سے سمجھنے لگے ہیں۔
 ہماری محتاط گنتی کے مطابق “القرآن" کے تمام الفاظ(86,430) اندازاً 1,118،  بنیادی، حروف،حروفِ جر اورضمیروں سے مل کر بنے ہیں اورایک لفظ کئی بار آیا ہے۔
جیسے اللہ2,703 مرتبہ آیا ہے۔مگر ہم نے اس کو ایک گننا ہے۔کیوں کہ اللہ ایک "کوڈ ورڈ" ہے  ، جو بھگوان  یا  God  سے مختلف کیوں کہ،  اللہ کی صفات نہ بھگوان میں ہے اور نہ ہی God  میں ، یہاں تک کسی اور ہستی میں -
 اس طرح لکتاب میں ،  اندازاً 14,809 الفاظ  رہ جاتے ہیں ۔
 گویا کہ “الکتاب" کے ابتدائی فہم کے لئے آپ کو زیادہ محنت نہیں کرنی پڑے گی۔
لہذا جب" القرآن " کی تلاوت ہو رہی ہو گی تو آپ کو انشاء اللہ سمجھ آئے گی۔ 
  ٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭
  سورۃ الفاتحہ میں استعمال ہونے والے  بنیادی  الفاظ  -
 اِن الفاظ پر کلک کریں آپ اُس پہلی  آیت پر چلے جائیں گے جس میں یہ درج ہیں - 
 عوذ ۔  ب ۔  الله ۔  من ۔ شطن ۔ رجم ۔ سمو ۔ رحم ۔ حمد ۔ ربّ ۔ علم ۔ ملك ۔ يوم ۔ دين ۔ايا  ۔ عبد ۔ عون ۔  هدي ۔ صرط  ۔ قام  ۔ الذی(ذا) ۔  نعم ۔ علي ۔ غير ۔ غضب ۔ و  ۔ لا  ۔ضلل  ۔
 
   ٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭

نوٹ: