صفحات

ہفتہ، 8 مارچ، 2014

آگاہی -1

  الکتاب  ،  القرآن، الفرقان

معلّم القرآن (الرحمٰن)  نے   رَحْمَةً لِّلْعَالَمِينکو  بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيمِ سے مِنَ الْجِنَّةِ وَ النَّاسِ تک عربی کے الفاظ میں حفظ کرایا  ۔ 

جو الارض کے انسانوں تک ، عربی میں تلاوت کرنا  فرض بنا ۔ نہ تفسیر سکھائی اور نہ ہی لغات  کا گھٹیا کام کیا ۔

 القرآن کی تلاوت سے اپنا فہم بنائیں ۔

القرآن    ایک بنیادی لفظ  سے بننے والے تمام الفاظ کا اردو میں ایک ہی نزدیک ترین  بنیادی   " اُمّی "   یعنی اُن پڑھوں والا  ترجمہ لیا ہے-
  سورۃ الفاتحہ میں استعمال ہونے والے ، اللہ کے     بنیادی  الفاظ ۔

جیسے  ،" شطن " لفظ جس آیت میں بھی  آئے گا  اُس کا فہم    " شطن "ہی رہے گا ۔  کسی اور لفظ کے فہم میں تبدیل نہیں ہو سکے گا ۔ اِسی طرح       " ضلل " کا فہم ، " ضلل "ہی رہے گا
"غضب" میں تبدیل نہیں کیا جاسکتا ۔
 تھوڑی سی محنت کے بعد آپ محسوس کریں گے، کہ آپ القرآن کی تلاوت آسانی سے سمجھنے لگے ہیں۔
 ہماری محتاط گنتی کے مطابق “القرآن" کے تمام الفاظ(86,430) اندازاً 1,118،  بنیادی، حروف،حروفِ جر اورضمیروں سے مل کر بنے ہیں اورایک لفظ کئی بار آیا ہے۔
جیسے اللہ2,703 مرتبہ آیا ہے۔مگر ہم نے اس کو ایک گننا ہے۔کیوں کہ اللہ ایک "کوڈ ورڈ" ہے  ، جو بھگوان  یا  God  سے مختلف کیوں کہ،  اللہ کی صفات نہ بھگوان میں ہے اور نہ ہی God  میں ، یہاں تک کسی اور ہستی میں -
 اس طرح لکتاب میں ،  اندازاً 14,809 الفاظ  رہ جاتے ہیں ۔
 گویا کہ “الکتاب" کے ابتدائی فہم کے لئے آپ کو زیادہ محنت نہیں کرنی پڑے گی۔
لہذا جب" القرآن " کی تلاوت ہو رہی ہو گی تو آپ کو انشاء اللہ سمجھ آئے گی۔ 
  ٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭
  سورۃ الفاتحہ میں استعمال ہونے والے  بنیادی  الفاظ  -
 اِن الفاظ پر کلک کریں آپ اُس پہلی  آیت پر چلے جائیں گے جس میں یہ درج ہیں - 
 عوذ ۔  ب ۔  الله ۔  من ۔ شطن ۔ رجم ۔ سمو ۔ رحم ۔ حمد ۔ ربّ ۔ علم ۔ ملك ۔ يوم ۔ دين ۔ايا  ۔ عبد ۔ عون ۔  هدي ۔ صرط  ۔ قام  ۔ الذی(ذا) ۔  نعم ۔ علي ۔ غير ۔ غضب ۔ و  ۔ لا  ۔ضلل  ۔
 
   ٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭

کوئی تبصرے نہیں:

ایک تبصرہ شائع کریں

نوٹ: