صفحات

منگل، 11 مارچ، 2014

الضَّالِّينَ : صِرَ‌اطَ الَّذِينَ أَنْعَمْتَ عَلَيْهِمْ غَيْرِ‌ الْمَغْضُوبِ عَلَيْهِمْ وَلَا الضَّالِّينَ












ایک چھوٹی سے توجہ :
" ض ل ل "  مادے سے، بننے والے 46 الفاظ الکتاب میں آئے ہیں جن کا بنیادی مفہوم یہی ہے کہ ، کسی  پر :
کذب ( صوتی یا بصری ) طریقوں سے "سبیل الناس" کو الحق بناتے ہوئے ،اُس کے ذہن پر ( سمع یا بصری illusion ) اثر انداز ہونا اور اُس کے خیال میں ، "سبیل اللہ" کا تصور دھندلانا اور اُسے " صراط المستقیم " سے ہٹانا ۔
اِس عمل میں کامیابی حاصل کرنے کے لئے محکمات میں متشھابھات ، کو اِس طرح  ملانا کہ متشھابھات ،  محکمات کا روپ دھار لیں ۔
اِس کی سادہ مثال ۔ کچے آڑووں (
محکمات) پر ، ایسا رنگ (متشھابھات) کرنا کہ وہ پکّے آڑو نظر آئیں ۔ اور خریدار " ض ل ل " ہو کر اُنہیں خرید لے ۔ لیکن جب اُن کا عملی استعمال کیا جائے ، تو نتیجہ دھوکے کی صورت میں نکلے !



٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭ 

آگاہی -2

٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭٭






کوئی تبصرے نہیں:

ایک تبصرہ شائع کریں

نوٹ: